لیکویڈیٹی پول (LP) ٹوکنز کیا ہوتے ہیں؟
امواد کا جدول
تعارف
لیکویڈیٹی فراہم کرنے کا کیا مطلب ہوتا ہے؟
لیکویڈیٹی پول (LP) کے ٹوکنز کیسے کام کرتے ہیں؟
میں لیکویڈیٹی پول ٹوکنز کہاں سے حاصل کر سکتا ہوں؟
میں لیکویڈیٹی پول (LP) ٹوکنز کے ساتھ کیا کر سکتا ہوں؟
LP ٹوکنز میں کس قسم کے خطرات شامل ہیں؟
اختتامی خیالات
لیکویڈیٹی پول (LP) ٹوکنز کیا ہوتے ہیں؟
ہومآرٹیکلز
لیکویڈیٹی پول (LP) ٹوکنز کیا ہوتے ہیں؟

لیکویڈیٹی پول (LP) ٹوکنز کیا ہوتے ہیں؟

جدید
شائع کردہ Jun 14, 2022اپڈیٹ کردہ Sep 29, 2022
7m

TL؛DR

لیکویڈیٹی پول کے ٹوکنز (جو کہ کبھی کبھار لیکویڈیٹی فراہم کنندہ ٹوکنز کے طور پر بھی جانے جاتے ہیں) ایسے صارفین کو دیے جاتے ہیں جو لیکویڈیٹی پولز میں لیکویڈیٹی فراہم کرتے ہیں۔ یہ ٹوکنز آپ کو اپنے اصل اسٹیک اور کمائے گئے سود پر دعویٰ کرنے کی اجازت دیتے ہوئے، رسید کے طور پر کام کرتے ہیں۔

آپ اپنے LP ٹوکنز کو کسی منافع جاتی فارم میں سود کو کمپاؤنڈ کرنے، کرپٹو قرضے نکلوانے یا اسٹیک کردہ لیکویڈیٹی کی ملکیت کو ٹرانسفر کرنے کے لیے بھی استعمال کر سکتے ہیں۔ تاہم، یہ سمجھنا اہم ہے کہ ایک بار جب آپ اپنے LP ٹوکنز کی تحویل سے دستبردار ہو جاتے ہیں، تو درحقیقت آپ کے پاس اس سے وابستہ لیکویڈیٹی کی ملکیت باقی نہیں رہتی۔


تعارف

چونکہ زیادہ تر DeFi صارفین لیکویڈیٹی پولز کے بارے میں جانتے ہیں، اس لیے LP ٹوکنز کا خیال اکثر بعد میں آتا ہے۔ تاہم، آپ کی فراہم کردہ لیکویڈیٹی کو ان لاک کرنے کے علاوہ ان کرپٹو اثاثہ جات کی اپنی استعمال کی صورتیں بھی ہوتی ہیں۔ لہذا، اگرچہ اپنے LP ٹوکنز کو دیگر ایپلیکیشنز میں استعمال کرنے میں خطرات لاحق رہتے ہیں، تاہم ان منفرد اثاثہ جات سے مزید مالیت اخذ کرنے کے لیے قابل عمل حکمت عملیاں بھی موجود ہیں۔


لیکویڈیٹی فراہم کرنے کا کیا مطلب ہوتا ہے؟

اپنی مبادیات میں، لیکویڈیٹی قیمت میں نمایاں تبدیلیوں کا باعث بنے بغیر کسی اثاثے کو بآسانی ٹریڈ کرنے کی صلاحیت ہے۔ مثال کے طور پر، Bitcoin (BTC) جیسی کرپٹو کرنسی، ایک انتہائی تصفیہ جاتی اثاثہ ہے۔ آپ اسے ہزاروں ایکسچینجز کے مابین، اس کی قیمت کو فعال طور پر متاثر کیے بغیر تقریباََ کسی بھی رقم میں ٹریڈ کر سکتے ہیں۔ تاہم، ہر ٹوکن اتنا خوش قسمت نہیں ہوتا کہ اس سطح کی لیکویڈیٹی کا حامل ہو۔

جب غیر مرکزی فنانس (DeFi) اور چھوٹے پراجیکٹس کی بات کی جائے، تو لیکویڈیٹی کم ہو سکتی ہے۔ مثال کے طور پر، ہو سکتا ہے کہ کوائن صرف ایک ایکسچینج پر دستیاب ہو۔ آپ کو اپنے آرڈر کے مماثل خریدار یا فروخت کنندہ کو تلاش کرنے میں بھی مشکل ہو سکتی ہے۔ ایسے میں لیکویڈیٹی پول ماڈل (جو کہ کبھی کبھار لیکویڈیٹی مائننگ کے طور پر جانا جاتا ہے) اس مسئلے کا حل ہو سکتا ہے۔

لیکویڈیٹی پول دو ایسے اثاثہ جات کا حامل ہوتا ہے جن کے درمیان صارفین سواپ کر سکتے ہیں۔ یوں مارکیٹ میکرز، ٹیکرز، یا کسی بھی قسم کی آرڈر بُک کی کوئی ضرورت نہیں ہوتی، اور قیمت کا تعین پول میں موجود اثاثہ جات کے تناسب کے ذریعے کیا جاتا ہے۔ ایسے صارفین لیکویڈیٹی فراہم کنندگان کے طور پر جانے جاتے ہیں جو ٹریڈنگ کو فعال کرنے کے لیے پول میں ٹوکنز کے جوڑے ڈپازٹ کرواتے ہیں۔ وہ ایسے صارفین پر معمولی سی فیس عائد کرتے ہیں جو ان کے ٹوکنز استعمال کرتے ہوئے سواپ کرتے ہیں۔

لہذا اگرچہ لیکویڈیٹی فراہم کرنے کا مطلب کسی مارکیٹ میں اپنے اثاثہ جات کی پیشکش کرنا ہوتا ہے، تاہم LP ٹوکنز کے معاملے میں ہم واضح طور پر DeFi کے لیکویڈیٹی پولز کے بارے میں بات کر رہے ہیں۔

نوٹ کریں کہ کسی اثاثہ جاتی جوڑے کے لیے لیکویڈیٹی پول کی موجودگی، معقول لیکویڈیٹی کی ضمانت نہیں۔ تاہم، آپ پول کو استعمال کرتے ہوئے ہمہ وقت ٹریڈ کرنے کے قابل ہوں گے اور آپ کو کسی بھی ایسے شخص پر انحصار کرنے کی ضرورت نہیں ہو گی جو آپ کے آرڈر سے مماثل ہو


لیکویڈیٹی پول (LP) کے ٹوکنز کیسے کام کرتے ہیں؟

لیکویڈیٹی پول میں ٹوکنز کے جوڑے ڈپازٹ کروانے کے بعد، آپ LP ٹوکنز کو بطور "رسید" وصول کریں گے۔ آپ کے LP ٹوکنز آپ کے پول کے حصے کو ظاہر کرتے ہیں اور آپ کو اپنے ڈپازٹ سمیت، اس کے ساتھ کسی بھی قسم کے حاصل کردہ سود کو بازیافت کرنے کی اجازت دیتے ہیں۔ چنانچہ، آپ کے ڈپازٹ کی حفاظت اور سکیورٹی کے ایک حصے کا دارومدار آپ کے اپنے LP ٹوکنز کو ہولڈ کرنے پر ہے۔ اگر آپ ان کو کھو دیتے ہیں، تو آپ اپنا شیئر بھی کھو دیں گے۔

آپ کو اپنے LP ٹوکنز، لیکویڈیٹی فراہم کرتے ہوئے اپنے استعمال کردہ والیٹ میں ملیں گے۔ آپ کو اسے اپنے کرپٹو والیٹ میں ملاحظہ کرنے کے لیے LP ٹوکن کے اسمارٹ معاہدے کے ایڈریس کو شامل کرنے کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ DeFi ایکو سسٹم میں زیادہ تر LP ٹوکنز والیٹس کے درمیان ٹرانسفر کیے جا سکتے ہیں، اور یوں ملکیت بھی ٹرانسفر کی جا سکتی ہے۔ تاہم، آپ کو چاہیئے کہ ہمیشہ لیکویڈیٹی پول سروس کے فراہم کنندہ سے تصدیق کر لیں، چونکہ صورتحال ہمیشہ ایک نہیں رہتی۔ کچھ صورتوں میں، ٹوکنز کو ٹرانسفر کرنا، فراہم کردہ لیکویڈیٹی کو مستقل طور پر کھو دینے کا باعث بن سکتا ہے۔


میں لیکویڈیٹی پول ٹوکنز کہاں سے حاصل کر سکتا ہوں؟

LP ٹوکنز صرف لیکویڈیٹی فراہم کنندگان کو ہی دیے جاتے ہیں۔ انہیں وصول کرنے کے لیے، آپ کو لیکویڈیٹی فراہم کرنے کے لیے کوئی DeFi DApp، جیسا کہ PancakeSwap یا Uniswap استعمال کرنے کی ضرورت ہو گی۔ LP ٹوکن کا سسٹم بہت سی بلاک چینز، DeFi پلیٹ فارمز، خودکار مارکیٹ میکرز (AMMs)، اور غیر مرکزی ایکسچینجز (DEXs) پر عام ہے۔ 

تاہم، اگر آپ لیکویڈیٹی پول کی سروسز کو کسی ایکسچینج پر مرکزی مالیات (CeFi) کی ترتیب میں استعمال کرتے ہیں، تو ممکن ہے کہ آپ کو LP ٹوکنز موصول نہ ہوں۔ اس کی بجائے، یہ تحویلی سروس کے فراہم کنندہ کی جانب سے تحویل میں رکھے جائیں گے۔

اپ کے LP ٹوکن کا نام عموماََ ان دو ٹوکنز کے ناموں کا حامل ہو گا جن میں آپ لیکویڈیٹی فراہم کر رہے ہیں۔ مثال کے طور پر، PancakeSwap کے لیکویڈیٹی پول میں فراہم کیے گئے CAKE اور BNB آپ کو CAKE-BNB LP کہلایا جانے والا ایک BEP-20 ٹوکن فراہم کریں گے۔ جبکہ Ethereum پر، LP ٹوکنز عام طور پر ERC-20 ٹوکنز ہوتے ہیں۔


میں لیکویڈیٹی پول (LP) ٹوکنز کے ساتھ کیا کر سکتا ہوں؟

اگرچہ LP ٹوکنز زیادہ تر ایک رسید کی طرح کام کرتے ہیں، تاہم ان کا مقصد محض یہیں تک محدود نہیں۔ DeFi میں، آپ کے پاس ہمیشہ اپنے اثاثہ جات کو متعدد پلیٹ فارمز اور lego جیسی اسٹیک سروسز پر استعمال کرنے کا موقع رہتا ہے۔

اںہیں قدر کی ٹرانسفر کے طور پر استعمال کریں

شاید LP ٹوکنز کے استعمال کی سب سے سادہ صورت ان کے ساتھ وابستہ لیکویڈیٹی کی ملکیت کو ٹرانسفر کرنا ہے۔ کچھ LP ٹوکنز مخصوص والیٹ کے ایڈریسز سے جڑے ہوتے ہیں، لیکن زیادہ تر ٹوکنز کے آزادانہ ٹرانسفر کی اجازت دیتے ہیں۔ مثال کے طور پر، آپ BNB-wBNB LP ٹوکنز کسی ایسے شخص کو بھیج سکتے ہیں جو بعد ازاں BNB اور wBNB کو لیکویڈیٹی پول سے ہٹا سکتا ہو۔

تاہم، دستی طور پر آپ کے پاس پول میں موجود ٹوکنز کی عین تعداد کا حساب لگانا ایک مشکل امر ہے۔ اس صورت میں، آپ اپنے LP ٹوکنز سے وابستہ اسٹیک کردہ ٹوکنز کی تعداد کا حساب لگانے کے لیے DeFi کیلکولیٹر کا استعمال کر سکتے ہیں۔

انہیں قرضے میں ضمانت کے طور پر استعمال کریں

چونکہ آپ کے LP ٹوکنز کسی بنیادی اثاثے کی ملکیت فراہم کرتے ہیں، اس لیے ان کو بطور ضمانت استعمال کرنا بھی استعمال کی ایک کارآمد صورت ہے۔ یعنی جب آپ BNB، ETH، یا BTC کو کسی کرپٹو قرضے کے لیے ضمانت کے طور پر فراہم کرتے ہیں، تو کچھ پلیٹ فارمز، ضمانت کے طور پر آپ کو اپنے LP ٹوکنز پیش کرنے کی اجازت دیتے ہیں۔ عموماََ، یہ آپ کو اسٹیبل کوائن یا مارکیٹ میں مالیت کے اعتبار سے کسی دیگر بڑے اثاثے کے عوض ادھار لینے کے قابل بنائے گا۔

ان صورتوں میں، ضمانت، قرضے سے زیادہ ہوتی ہے۔ اگر آپ ضمانت کا خاص تناسب برقرار نہیں رکھ پاتے، تو قرض دینے والا بنیادی اثاثہ جات کا دعویٰ کرنے اور ان کا تصفیہ کرنے کے لیے آپ کے LP ٹوکنز استعمال کرے گا۔

ان کے منافعے کو کمپاؤنڈ کریں

اپنے LP ٹوکنز کے ساتھ انجام دیے جانے والے عام ترین کاموں میں سے ایک انہیں کسی منافع جاتی کمپاؤنڈر (جو کہ کبھی کبھار منافع جاتی فارم کے طور پر جانا جاتا ہے) میں ڈپازٹ کرنا ہے۔ یہ سروسز آپ کے LP ٹوکنز لیں گی، باقاعدگی سے انعامات تیار کریں گی، اور ٹوکن کے مزید جوڑے خریدیں گی۔ پھر، کمپاؤنڈر ان کو واپس لیکویڈیٹی پول میں اسٹیک کر دے گا، جو آپ کو اپنا سود کمپاؤنڈ کرنے کے قابل بنائے گا۔

اگرچہ یہ عمل دستی طور پر بھی انجام دیا جا سکتا ہے، تاہم بہت سی صورتوں میں، ایک منافع جاتی فارم، انسانی صارفین کی نسبت زیادہ موثر انداز میں کمپاؤنڈ کر سکتا ہے۔ زیادہ ٹرانزیکشن کی فیس صارفین کے مابین شیئر کی جا سکتی ہے، اور حکمت عملی کی بنیاد پر، ایک دن میں کئی بار کمپاؤنڈنگ کی جا سکتی ہے۔


LP ٹوکنز میں کس قسم کے خطرات شامل ہیں؟

بالکل دیگر کسی بھی ٹوکن کی طرح، LP ٹوکنز کے ساتھ بھی خطرات وابستہ ہیں۔ جس میں شامل ہیں:

1. گم یا چوری ہونا: اگر آپ اپنا LP ٹوکن کھو دیتے ہیں، تو آپ لیکویڈیٹی پول میں اپنے شیئر اور حاصل ہونے والے کسی بھی منافعے سے محروم ہو جاتے ہیں۔

2. اسمارٹ معاہدے کی ناکامی: اگر اسمارٹ معاہدے کی ناکامی کے سبب آپ کے زیر استعمال لیکویڈیٹی پول پر سمجھوتہ ہو جاتا ہے، تو آپ کے LP ٹوکنز، اب مزہد آپ کو اپنی لیکویڈیٹی واپس کرنے کے قابل نہیں ہوں گے۔ اسی طرح، اگر آپ اپنے LP ٹوکنز کو کسی منافع جاتی فارم یا قرض کے فراہم کنندہ کے ساتھ اسٹیک کرتے ہیں، تو ان کے اسمارٹ معاہدات بھی ناکام ہو سکتے ہیں۔

3. یہ جاننے میں دشواری کہ یہ کس چیز کی نمائندگی کرتے ہیں: اپنے LP ٹوکنز کو دیکھتے ہوئے، یہ پتا لگانا تقریباََ ناممکن ہوتا ہے کہ درحقیقت ان کی مالیت کیا ہے۔ اگر ٹوکن کی قیمتوں میں تضاد آ جائے، تو ممکن ہے کہ آپ کو بھی عارضی خسارہ ہوا ہو۔ آپ کو اپنے مفاد پر بھی غور کرنا ہے۔ یہ غیر یقینی صورتحال آپ کے لیے اس حوالے سے فیصلہ لینے کو مشکل بنا دیتی ہے کہ اپنی لیکویڈیٹی کی پوزیشن سے کب خارج ہوا جائے۔

4. موقعے کا خطرہ: اپنے ٹوکن کو لیکویڈیٹی کے طور پر فراہم کرنے میں، موقعے کی لاگت بھی شامل ہوتی ہے۔ کچھ صورتوں میں، آپ کے لیے بہتر ہو سکتا ہے کہ آپ کسی اور جگہ پر اپنے ٹوکنز کی سرمایہ کاری کریں یا انہیں کسی مختلف موقعے پر استعمال کریں۔


اختتامی خیالات

اگلی بار جب آپ کسی DeFi پروٹوکول پر موجود لیکویڈیٹی پول کے لیے کرپٹو کی لیکویڈیٹی فراہم کریں، تو یہ بات قابل غور ہو گی کہ کیا آپ اپنے LP ٹوکنز کو بھی استعمال میں لانا چاہتے ہیں۔ لیکویڈیٹی پول میں ڈپازٹ کروانا کسی DeFi حکمت عملی کا محض پہلا حصہ ہو سکتا ہے۔ لہذا صرف HODLing کے علاوہ، یہ فیصلہ کرنے کے لیے کہ آیا مزید سرمایہ کاری آپ کے لیے مناسب ہے یا نہیں، بہتر ہے کہ آپ اپنے سرمایہ کاری کے منصوبوں اور خطرے کو برداشت کرنے کی صلاحیت پر بھی ایک نظر ڈال لیں۔