OCO آرڈر کیا ہوتا ہے؟
OCO آرڈر کیا ہوتا ہے؟
ہومآرٹیکلز
OCO آرڈر کیا ہوتا ہے؟

OCO آرڈر کیا ہوتا ہے؟

نو آموز
شائع کردہ Aug 22, 2019اپڈیٹ کردہ Sep 23, 2022
3m
نوٹ: جاری رکھنے سے قبل متعین اور اسٹاپ کی حد والے آرڈرز کے متعلق ہم اپنی ہدایات پڑھنے کی پرزور طور پر تجویز کرتے ہیں۔


ایک OCO، یا "ایک دوسرے کو منسوخ کرتا ہے" آرڈر آپ کو ایک ہی وقت میں دو آرڈرز دینے کی اجازت دیتا ہے۔ یہ متعین آرڈر کو، اسٹاپ کی حد والے آرڈر کے ساتھ یکجا کرتا ہے، لیکن ان دو میں سے صرف ایک پر ہی عمل درآمد کیا جا سکتا ہے۔

دوسرے لفظوں میں، جیسے ہی آرڈرز میں سے کوئی ایک جزوی یا مکمل طور پر پُر ہو جاتا ہے، ویسے ہی باقی رہ جانے والا آرڈر خود کار طور پر منسوخ ہو جائے گا۔ نوٹ کریں کہ آرڈرز میں سے کسی ایک کو دستی طور پر منسوخ کرنا دوسرے آرڈر کو بھی منسوخ کر دے گا۔

Binance ایکسچینج پر ٹریڈ کرتے وقت، آپ OCO آرڈرز ٹریڈ کی خودکاری کی بنیادی قسم کے طور پر استعمال کر سکتے ہیں۔ یہ خصوصیت آپ کو بیک وقت دو متعین آرڈرز دینے کا آپشن مہیا کرتی ہے، جو منافع لینے اور ممکنہ خسارے کم سے کم کرنے کے لیے مفید ثابت ہو سکتا ہے۔


OCO آرڈرز کو کس طرح سے استعمال کیا جائے؟

اپنے Binance اکاؤنٹ میں لاگ ان کرنے کے بعد،  بنیادی ایکسچینج کے انٹرفیس پر جائیں اور ذیل میں دیے گئے خاکے کے مطابق ٹریڈنگ کی جگہ کو تلاش کریں۔ ڈراپ ڈاؤن مینو کھولنے کے لیے "اسٹاپ کی حد والے آرڈر" پر کلک کریں اور "OCO" منتخب کریں۔


Binance پر، OCO آرڈرز خرید یا فروخت کے جوڑوں کے آرڈرز کے طور پر دیے جا سکتے ہیں۔ آپ "i" کے نشان پر کلک کر کے OCO آرڈرز کے حوالے سے مزید معلومات تلاش کر سکتے ہیں۔


OCO کے آپشن کو منتخب کرنے کے بعد، ٹریڈنگ کا ایک نیا انٹر فیس لوڈ کر دیا جائے گا، جیسا کہ ذیل میں دکھایا گیا ہے۔ یہ انٹر فیس آپ کو متعین اور اسٹاپ کی حد والے آرڈر بیک وقت سیٹ کرنے کی اجازت دیتا ہے۔

متعین آرڈر

  • قیمت: آپ کے متعین آرڈر کی قیمت۔ یہ آرڈر، آرڈر بُک پہ دکھائی دے گا۔

اسٹاپ کی حد

  • اسٹاپ: وہ قیمت جس پر آپ کا اسٹاپ کی حد والا آرڈر حرکت میں آئے گا (مثلاََ، 0.0024950 BTC)۔
    حد: اسٹاپ کے حرکت میں آنے کے بعد آپ کے متعین آرڈر کی اصل قیمت (مثلاََ، 0.0024900 BTC)۔
  • رقم: آپ کے آرڈر کا سائز (مثلاََ، 5 BNB)۔
  • کل: آپ کے آرڈر کی کل مالیت۔


اپنا OCO آرڈر دینے کے بعد، آپ "جاری آرڈرز" کے سیکشن پر دونوں آرڈرز کی تفصیلات ملاحظہ کرنے کے لیے نیچے کی جانب اسکرول کر سکتے ہیں۔

ایک مثال کے طور پر، آئیں فرض کرتے ہیں کہ آپ نے ابھی 0.0026837 BTC پر 5 BNB خریدے ہیں کیونکہ آپ کو یہ یقین ہے کہ قیمت ایک بڑے معاونتی زون کے قریب ہے اور ممکنہ طور پر مزید اوپر جائے گی۔

اس صورت میں، آپ OCO خصوصیت 0.0024900 BTC پر اسٹاپ کی حد والے آرڈر کے ساتھ 0.0030 BTC پر منافع لینے والا آرڈر دینے کے لیے استعمال کر سکتے ہیں۔


اگر آپ کی پیش گوئی درست ثابت ہوتی ہے اور قیمت میں 0.0030 BTC تک یا اس سے زائد کا اضافہ ہوتا ہے، تو آپ کے فروخت کے آرڈر پر عمل درآمد کر دیا جائے گا، اور اسٹاپ کی حد والا آرڈر خودکار طور پر منسوخ ہو جائے گا۔

دوسری صورت میں، اگر آپ غلط ثابت ہونے پر اختتام کرتے ہیں اور قیمت 0.0024950 BTC تک گر جاتی ہے، تو آپ کا اسٹاپ کی حد والا آرڈر متحرک ہو جائے گا۔ قیمت کے مزید گرنے کی صورت میں، یہ ممکنہ طور پر آپ کے خسارے کم سے کم کر دے گا۔

نوٹ کریں کہ اس مثال میں، اسٹاپ کی قیمت 0.0024950 (ٹریگر کی قیمت) اور متعین قیمت 0.0024900 (آپ کے آرڈر کی ٹریڈنگ کی قیمت) ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ 0.0024950 کے نشان پر پہنچتے ہی آپ کا اسٹاپ کی حد والا آرڈر حرکت میں آ جائے گا۔ اور آرڈر کی اصل قیمت جو متعین آرڈر کے طور پر دی جائے گی، 0.0024900 ہو گی۔ دوسری طرح سے، اگر BNB/BTC 0.0024950 تک یا اس سے بھی نیچے گر جاتے ہیں، تو 0.0024900 پر متعین فروخت کا آرڈر دے دیا جائے گا۔ تاہم، اگر قیمت 0.0024950 سے نیچے گر جاتی ہے، تو یہ خطرہ ہے کہ شاید متعین آرڈر پُر نہ ہو سکے۔ 

OCO خصوصیت ایک سادہ لیکن طاقتور ٹول ہے، جو آپ کو اور Binance کے دیگر صارفین کو زیادہ محفوظ اور ہمہ گیر طریقے سے ٹریڈ کرنے کی اجازت دیتی ہے۔ آرڈر کی یہ خاص قسم منافع جات لاک کرنے، خطرات کو محدود کرنے، اور یہاں تک کہ پوزیشنز میں داخل ہونے اور باہر نکلنے کے لیے بھی فائدہ مند ثابت ہو سکتی ہے۔ پھر بھی، OCO آرڈرز استعمال کرنے سے قبل متعین اور اسٹاپ کی حد والے آرڈرز کی اچھی سمجھ بوجھ رکھنا اہم ہے۔